اہم خبرصحت

فحش فلمیں کثرت سے دیکھنے والوں کے حوالے سے ماہرین کی پریشان کن تحقیق سامنے آگئی

ماہرین کے مطابق فحش فلمیں دیکھنے کی لت نشے سے زیادہ بری اور نقصان دہ لت ہے ، جس کے اخلاقی ، جسمانی اور طبی نقصانات ناقابلِ تلافی ہیں

فحش فلموں کی لت اخلاقی، ذہنی اور جسمانی ہر لحاظ سے لوگوں کو ایسے نقصانات سے دوچار کرتی ہے کہ کوئی سوچ بھی نہیں سکتا۔ ماہرین اسے کوکین کی لت سے مشابہہ اور اس سے زیادہ خطرناک قرار دیتے ہیں۔ اب نئی تحقیق میں اس لت میں مبتلا لوگوں کو مزید سخت وارننگ دے دی گئی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق ڈنمارک اور بیلجیم کے سائنسدانوں نے اس مشترکہ تحقیقاتی سروے کے نتائج میں بتایا ہے کہ جو لوگ فحش فلمیں دیکھنے کی لت میں مبتلا ہوتے ہیں ان میں عضو مخصوصہ کی ایستادگی کا مسئلہ بہت زیادہ ہوتا ہے۔ ایسے لوگوں میں سے ایک تہائی ایسے ہوتے ہیں جنہیں صرف فلمیں دیکھنے سے ہی تحریک ملتی ہے اور جب وہ خود جنسی تعلق قائم کرنے کی کوشش کرتے ہیں تو وہ اس میں ایستادگی کے مسئلے کی وجہ سے ناکام رہتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق اس سروے میں سائنسدانوں نے 16سال سے زائد عمر کے 3ہزار 267مردوں سے سوالات پوچھے۔ اوسط لوگوں نے اعتراف کیا کہ وہ ہفتے میں 70منٹ فحش فلمیں دیکھتے ہیں جبکہ اس کے برعکس 5سے 15منٹ خود جنسی تعلق قائم کرتے ہیں۔تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ پروفیسر گنٹر ڈی ون کا کہنا تھا کہ ”ہماری تحقیق میں یہ معلوم ہوا ہے کہ فحش فلموں کی لت اور ایستادگی کے درمیان گہرا تعلق ہے۔ جو لوگ جتنی زیادہ فحش فلمیں دیکھتے ہیں انہیں ایستادگی کا مسئلہ اتنا ہی زیادہ ہوتا ہے۔“

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button