دنیا

صفورہ زرگر کو تہاڑ جیل سے رہا کردیا گیا

نئی دہلی: جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی کی طالبہ صفورہ زرگر کو دہلی کی تہاڑ جیل سے رہا کر دیا گیا ہے۔ ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق صفورہ زرگر کو گزشتہ روز دہلی ہائی کورٹ نے مشروط ضمانت دی تھی۔

 

نئی دہلی: صفورہ پر دہلی فسادات میں ملوث ہونے کا الزام ہے۔
جیل سے رہا ہونے پر صفورہ کے شوہر انہیں لینے جیل پہنچے تھے، شلوار سوٹ میں ملبوس زرگر نے کسی سے بات نہیں کی اور شوہر کی گاڑی میں بیٹھ کر گھر روانہ ہوگئیں۔ غیر قانونی سرگرمیوں کی روک تھام کے قانون کے تحت قید و بند کی صعوبتیں برداشت کرنے والی صفورہ زرگر کو گزشتہ روز دہلی ہائی کورٹ سے ضمانت ملی تھی۔ ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق اس سے قبل دہلی ہائی کورٹ میں جسٹس راجیو شکدھر کی بینچ میں صفورہ کی عرضی پر سماعت کے دوران سالیسیٹر جنرل تشار مہتا نے سماعت میں التوا کا مطالبہ کیا جسے عدالت نے منظو کرتے ہوئے سماعت کو ایک دن کے لیے یعنی 23 جون تک موخر کر دیا تھا لیکن دوسرے دن ہائی کورٹ نے انہیں ضمانت دے دی۔صفورہ زرگر کی ضمانت کے لیے یہ چوتھی کوشش تھی جس پر گزشتہ روز بھی کوئی پیش رفت نہیں ہوئی تھی، تقریبا 24 ہفتوں کی حاملہ صفورہ زرگر کی ضمانت کی درخواست کو ذیلی عدالت نے خارج کر دیا تھا جسے دہلی ہائی کورٹ میں چیلنج کیا گیا۔جس ایف آئی آر کے تحت صفورہ کو حراست میں لیا گیا ہے، اس میں دہلی فسادات کی سازش کی انکوائری کی جارہی ہے، اسی کے ساتھ سخت ترین قانون ‘یو اے پی اے’ بھی عائد کیا گیا ہے۔ساوتھ ایشین وائر کے مطابق صفورہ کو 10 اپریل کو گرفتار کیا گیا تھا تب سے انہوں نے ضمانت کے لیے چار مرتبہ کوششیں کی تھیں اس کے بعد انہیں ضمانت ملی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button